دل دیاں گللاں،صفہ نمبر تیرہ، شاعر دانیال ملک

دل دیاں گللاں،صفہ نمبر تیرہ، شاعر دانیال ملک

وہ جام جیسی آنکھیں جنے دیکھ کر نشہ ہو جاے
وہ خوبصورت زلفے جو ہمے بے تاب کر جاے
میری الفت کا راز وہ ہی ہے جو دل میں امٹ رہے ہے
وہ میری زندگی ہے ہم سب کو یہی بتاتے پھر رہے ہے

درخت کے پتے بھی اسکی ناراضگی پے مرجھا رہے ہے
وہ باتے ہی نہیں جو محبت میں دل میں رکھ رہے ہے
عشق میں ایک بات کا مزا ہے اے دانیال
وہ ہار بھی جاے تو ہم انھے جیتا رہے ہے

ذوق سے شوق لگا ہمے دل تھام کے ذرا دیکھو
اتنا حسن ہے تم میں ذرا دل میں تو دیکھو

دل دیاں گللاں، شاعر دانیال ملک

Copyrights © 2019. All rights reserved. www.pakistanonline.org

Daniyal Malik

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *